0
Friday 6 Jul 2012 23:01

پاکستان کی کشمیر پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئیگی، راجہ پرویز اشرف

پاکستان کی کشمیر پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئیگی، راجہ پرویز اشرف
اسلام ٹائمز۔ پاکستان نے کشمیر پالیسی میں تبدیلی یا نرمی کو بعید از قیاس قرار دیتے ہوئے واضح کیا ہے کہ اقوام متحدہ کی قراردادیں اور کشمیریوں کی اُمنگ مسئلہ کشمیر کے حل کی اصل بنیاد ہے، کشمیریوں کی اخلاقی، سیاسی اور سفارتی مدد جاری رکھنے کا اعادہ کرتے ہوئے پاکستان کے وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حل تک پاکستان کی کشمیر پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئیگی، پاکستان مقبوضہ کشمیر کے عوام کی اخلاقی، سیاسی اور سفارتی مدد تب تک جاری رکھے گا جب تک مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کی بنیاد پر کشمیری عوام کی خواہشات کے عین مطابق حل نہیں کیا جائے گا، انہوں نے اسلام آباد میں آزاد کشمیر کے وزیر اعظم چودھری عبدالمجید کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران پاکستان کی کشمیر پالیسی میں کسی بھی قسم کی تبدیلی یا نرمی کو خارج از امکان قرار دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان مسئلہ کشمیر کے پُرامن حل کا خواہاں ہے۔
 
پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ پاکستان کی کشمیر پالیسی اصولوں کی بنیاد پر ہے، اور اس میں کوئی تبدیلی لانا ناممکن ہے، وزیر اعظم نے کہا کہ کشمیری عوام نے اپنے بنیادی حق کیلئے بے پناہ قربانیاں دی ہیں اور گونا گوں تکالیف اور مشکلات کا سامنا کیا ہے۔ پاکستان کشمیری عوام کی قربانیوں کو رائیگاں نہیں جانے دے گا، انہوں نے آزاد کشمیر کی حکومت ساتھ تعمیراتی، ترقیاتی، فلاحی، تعلیمی اور تحقیقی شعبوں میں ہر ممکن تعاون جاری رکھنے کا اعلان کرتے ہوئے کئی میڈیکل کالجوں کے قیام کیلئے درکار رقوم فراہم کرنے کی یقین دہانی بھی کرائی۔
خبر کا کوڈ : 177053
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش