0
Thursday 31 Jan 2013 22:36

امت مسلمہ کے مسائل کا حل باہمی اتحاد میں مضمر ہے، لیاقت بلوچ

امت مسلمہ کے مسائل کا حل باہمی اتحاد میں مضمر ہے، لیاقت بلوچ
اسلام ٹائمز۔ جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے قونصلیٹ اسلامی جمہوریہ ایران کے زیراہتمام "قاضی حسین احمد کی نظر میں بیداری امت اور علماء کی ذمہ داری ‘‘ کے عنوان سے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قاضی حسین احمد مولانا مودودی کی فکر کے حقیقی امین تھے جن کے دل میں امت کا درد بدرجہ اتم موجود تھا، وہ پوری امت مسلمہ کو وحدت کی لڑی میں دیکھنا چاہتے تھے اور اس کے لئے ہی مصروف عمل تھے۔ لیاقت بلوچ نے مزید کہا کہ قاضی حسین احمد کی پوری زندگی آنے والی نسلوں کے لئے مشعل راہ ہے، جنہوں نے ہر قدم پر امت کی فلاح اور اتحاد کی بات کی، کشمیر کی چوٹیوں سے بوسینا کی وادیوں تک، قاضی حسین احمد نے امت کے درد کو اپنے سینے میں محسوس کیا اور اس کے علاج کے لئے نکل پڑے، قاضی حسین احمد کی پوری زندگی امت مسلمہ کے اتحاد کے لئے وقف ہوچکی تھی۔ انہوں نے کہا کہ قاضی حسین احمد قرآن وسنت کے داعی تھے، وہ فکر اقبال کے پیرو تھے اور آنے والی نسلوں تک اقبال کا پیغام پہنچانا ان کا مقصد تھا۔

انہوں نے کہا کہ میں ایران کے قونصل خانے کا انتہائی مشکور ہوں، جنہوں نے قاضی حسین احمد کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے یہ محفل سجائی اور ضرورت اس امر کی ہے کہ قاضی حسین احمد کی فکر کو آگے بڑھایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح قاضی حسین احمد عقیدے، مسلک اور جماعت کے فرق سے مبرا تھے، اسی طرح ہمیں بھی ان کے انہی افکار کو لے کر آگے بڑھنا ہوگا، کیوں کہ ہمارے تمام مسائل کا حل ہمارے باہمی اتحاد میں مضمر ہے۔
خبر کا کوڈ : 236261
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب