0
Sunday 16 Feb 2014 21:17

امریکہ، اسرائیل اور انکی پٹھو عرب ریاستیں پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کر رہی ہیں، سیرت نبوی کانفرنس

امریکہ، اسرائیل اور انکی پٹھو عرب ریاستیں پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کر رہی ہیں، سیرت نبوی کانفرنس
اسلام ٹائمز۔ پاکستان دہشتگردوں کے نرغے میں ہے اور حکومت سمیت سیاسی قیادت تماشائی بنی ہوئی ہے، عوام طالبانی شریعت کو مسترد کرتے ہیں، پاکستانی عوام افواج پاکستان کے ساتھ مل کر طالبان دہشتگردی کے خاتمے کیلئے حاضر ہیں، پاکستان کے دفاع اور تحفظ کیلئے کسی قسم کی قربانی اور راست اقدام سے دریغ نہیں کریں گے، امریکا، اسرائیل اور انکی پٹھو عرب ریاستیں پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کر رہی ہیں، ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما علامہ احمد اقبال رضوی، سنی اتحاد کونسل کراچی کے صدر مولانا فیصل عزیزی، تحریک منہاج القرآن کراچی شعبہ خواتین کی صدر تسبیہہ شفیق، جمعیت علماء پاکستان سندھ خواتین کی صدر ڈاکٹر بلقیس صدیقی اور ایم ڈبلیو ایم سندھ شعبہ خواتین کی سیکریٹری جنرل زہرا نجفی نے کراچی آرٹس کونسل میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن شعبہ خواتین کے زیر اہتمام منعقدہ ”محفل میلاد “ اور ”سیرت نبوی کانفرنس“ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سیرت نبوی کانفرنس مختلف مسالک سے تعلق رکھنے والی سینکڑوں خواتین نے شرکت کی اور بارگاہ رسالت ماب میں نذرانہ عقیدت پیش کیا۔
 
”سیرت نبوی کانفرنس“ سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما علامہ احمد اقبال رضوی نے کہا کہ پیغمبر اکرم (ص) کی ذات اقدس تمام مسلمانوں کے درمیان وحدت اور اتحاد کا مظہر ہے جبکہ عالمی استعمار اور پاکستان کی مخالف قوتیں امریکا، اسکی ناجائز اولاد اسرائیل اور انکی پٹھو عرب ریاستیں پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنے کی کوششوں میں مصروف عمل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عالمی استعمار امریکا اور صیہونی قوتیں براہ راست تعلیمات نبوی (ص) پر یلغار کر رہی ہیں اور دنیا بھر میں دہشتگردوں کی مدد اور دہشتگردی کو فروغ دینے میں مصروف عمل ہیں۔ علامہ احمد اقبال کا کہنا تھا کہ پاکستان پاکستانیوں کا ہے اور طالبان دہشتگردوں کو ہرگز یہ حق نہیں پہنچتا کہ وہ پاکستان کے عوام کو قتل کریں اور پھر معصوم بن کر مذاکرات کی میز پر آئیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ شریعت کی تمام حدود کی پائمالی کرنے والے طالبان دہشتگردوں کی جانب سے شریعت کا مطالبہ دراصل شریعت محمدی کی توہین ہے۔
 
علامہ احمد اقبال نے کہا کہ حکومت ایک طرف طالبان دہشت گردوں سے مذاکرات کا ڈھونگ رچا رہی ہے تو دوسری طرف طالبان دہشت گرد سکیورٹی فورسز سمیت اعلٰی افسران اور پاکستان کے عوام کو مسلسل دہشت گردی کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اور قانون نافذ کرنے والے ادارے فوری طور پر طالبان دہشت گردوں کی نامزد کردہ کمیٹی کو گرفتار کرکے ساٹھ ہزار سے زائد  پاکستانیوں کے قتل کا مقدمہ درج کرے کیونکہ طالبان دہشت گردوں کے ساتھ ساتھ ان کی نامزد کردہ کمیٹی دراصل پاکستانیوں کے خون اور قتل و غارت میں برابر ملوث ہے۔

سنی اتحاد کونسل کراچی کے صدر مولانا فیصل عزیزی نے کہا کہ پاکستان خطرے میں ہے اور حکومت سمیت سیاسی قائدین خواب غفلت میں ہیں۔ انہوں نے پاکستان میں طالبان دہشتگردوں کے فتنے کو خوارج کے فتنے سے تشبہیہ دیتے ہوئے ان تمام طالبان حمایتیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور مطالبہ کیا کہ طالبان دہشت گردوں کے ساتھ مذاکرات نہیں بلکہ فوجی آپریشن کیا جائے اور پاکستانی عوام کو طالبانی فتنے سے نجات دلوائی جائے۔ مولانا فیصل عزیزی نے مزید کہا کہ طالبان دہشتگردوں کے حمایتی نام نہاد مذہبی جماعتوں کے قائدین کی جانب سے میڈیا میں معصوم پاکستانی عوام کو طالبان کی جانب سے دہشتگردی سے ڈرانا انتہائی قابل مذمت ہے۔ اس موقع پر خواتین کی جانب سے نعت خوانی اور قصیدہ خوانی بھی کی گئی اور شان رسالت مآب میں نذرانہ عقیدت کے پھول نچھاور کئے گئے۔
خبر کا کوڈ : 352313
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش