0
Monday 9 Jun 2014 16:43

کراچی ایئرپورٹ پر حملے کی رپورٹ وزیراعظم کو پیش، دہشتگرد تمام طیارے تباہ کرنا چاہتے تھے

کراچی ایئرپورٹ پر حملے کی رپورٹ وزیراعظم کو پیش، دہشتگرد تمام طیارے تباہ کرنا چاہتے تھے
اسلام ٹائمز۔ کراچی ایئرپورٹ پر حملے کی رپورٹ وزیراعظم کو پیش کر دی گئی، جس میں کہا گیا ہے کہ دہشت گرد تمام طیارے تباہ کرنا چاہتے تھے، جبکہ حملے میں اے ایس ایف کے 8، رینجرز کا ایک اور پولیس کے 2 اہلکاروں سمیت 19 افراد جاں بحق جبکہ 26 زخمی ہوئے۔ وزیراعظم کی زیر صدارت اعلٰی سطح کا اجلاس ہوا، جس میں سکیورٹی فورسز سمیت انٹیلی جنس ایجنسیز کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔ اجلاس کے دوران سکیورٹی فورسز اور خفیہ ایجنسیوں کی جانب سے کراچی ایئرپورٹ پر ہونے والے حملے کی رپورٹ پیش کی گئی، جس میں کہا گیا کہ دہشت گرد پرانے ایئرپورٹ کے 2 اطراف سے داخل ہوئے اور ٹرمینل کے قریب کھڑے تمام جہازوں کو نشانہ بنا کر تباہ کرنا چاہتے تھے، تاہم پاک فوج، رینجرز، اے ایس ایف اور پولیس کے اہلکاروں نے دہشت گردوں کے حملے کو پسپا کرتے ہوئے اپنی جان کی قربانی دے کر ٹرمینل پر کھڑے جہازوں کو بڑی تباہی سے بچایا۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ ایئرپورٹ پر حملے کے نتیجے میں اے ایس ایف کے 8، رینجرز کا ایک اور پولیس کے 2 اہلکاروں سمیت 19 افراد جاں بحق، جبکہ 26 زخمی ہوئے، اسکے علاوہ فورسز کی کارروائی میں تمام 10 حملہ آور مارے گئے۔ وزیراعظم نواز شریف نے اے ایس ایف کے جوانوں کی بہادری کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ فورسز کے اہلکاورں نے اپنی جان کی قربانی دے کر ایئرپورٹ پر کھڑے طیاروں کو بڑے نقصان سے پچایا، تاہم اس ساتھ ہی وزیراعظم نے دہشت گردوں کے ایئرپورٹ میں داخل ہونے اور ناقص سکیورٹی پر تشویش کا اظہار بھی کیا۔
خبر کا کوڈ : 390654
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے