0
Friday 30 Oct 2015 14:00

فکر حسینی کو عام کرنیکی انتہائی ضرورت ہے، شیخ الجامعہ کراچی کا یوم حسینؑ سے خطاب

فکر حسینی کو عام کرنیکی انتہائی ضرورت ہے، شیخ الجامعہ کراچی کا یوم حسینؑ سے خطاب
اسلام ٹائمز۔ جامعہ کراچی میں دفتر مشیر امور طلبہ اور امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کراچی ڈویژن کے زیرِ اہتمام سالانہ عظیم الشان یوم حسینؑ کا انعقاد پارکنگ ایریا نزد آرٹس لابی میں کیا گیا، جس میں امور مشیر طلبہ ڈاکٹر انصر رضوی، جامعہ کراچی ٹیچرز سوسائٹی کے صدر ڈاکٹر جمیل کاظمی، جوائنٹ سیکریٹری ڈاکٹر تنویر عباس، آئی ایس او کراچی ڈویژن کے صدر یاور عباس سمیت اساتذہ و طلباء و طالبات کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی۔ یوم حسینؑ کی صدارت شیح الجامعہ پروفیسر ڈاکٹر قیصر خان نے کی، جبکہ شرکائے یوم حسینؑ سے خصوصی خطاب حجتہ السلام علامہ شہنشاہ حسین نقوی نے کیا، جبکہ اس موقع پر مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ حسن ظفر نقوی، علامہ حامد حسین مشہدی اور علامہ وقاص ہاشمی نے بھی خطاب کیا۔ یوم حسینؑ میں شریک طلباء و طالبات سے اپنے صدارتی خطاب میں ڈاکٹر محمد قیصر خان نے کہا کہ فکرِ حسینی کو عام کرنے کی انتہائی سخت ضرورت ہے، حسینی فکر حق کی سربلندی اور انصاف کی خاطر جہدوجد کرنے کا نام ہے، آج بھی یزیدی عناصر موجود ہے، یزیدیت برے اعمال کا نام ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام عالم اسلام اس وقت انتشار کا شکار ہے، اور عالم اسلام کی حالات میں بہتری لانے میں طلباء و طالبات کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔

علامہ شہنشاہ حسین نقوی نے کہا کہ ہر بیدار ضمیر امام اعلی مقام حضرت امام حسینؑ کی یاد کو زندہ رکھے ہوئے ہے، دور حضرت آدمؑ سے آج تک بقائے انسانیت کی خاطر حق و باطل کی جنگ جاری ہے، تاریخ اس بات کی شاہد ہے کہ معرکہ حق و باطل میں طاقت کے زور پر کامیاب ہونے والے ہمیشہ ناکام ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ واقعہ کربلا نے تاقیامت حق و باطل کے درمیان ایک لکیر قائم کر دی ہے، فکر حسینیؑ عام کر کے دہشتگردی کو شکست دی جا سکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ باب العلم کے ماننے والوں کا تقدس تعلیم ہونا چاہیئے، نوجوانی کی تعلیم کیساتھ کیساتھ تربیت کی اعلی ترین درس گاہ کربلا ہے، دہشتگرد عناصر جامعات کے طلباء و طالبات کو اپنے مقاصد کی خاطر استعمال کر رہے ہیں، جامعات میں پرورش پانے والے دہشتگردوں کے خلاف انتظامیہ کارروائی کریں۔

یوم حسینؑ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے علامہ حسن ظفر نقوی نے کہا کہ امام حسینؑ کی قربانی کا مقصد دین محمد کی سر بلندی تھا، جامعات میں یوم حسینؑ کا انعقاد اس بات کا ثبوت ہے کہ حسینیت فرقہ واریت نہیں، بلکہ اتحاد بین المسلمین کا عظیم ذریعہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام میں دیگر مذاہب کی توہین جائز نہیں ہے، بلکہ ایسا کرنے والا خارجی ہے۔ یوم حسین ؑ میں خطاب کرتے ہوئے علامہ وقاص ہاشمی کا کہنا تھا کہ یزید ایک شخص کا نام نہیں بلکہ ایک طرز فکر کا نام ہے، ہمیں حسینیت عام کرنے میں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ اس موقع پر علامہ حامد حسین مشہدی و دیگر نے بھی خطاب کیا۔ یوم حسینؑ کے دوران طلباء و طالبات نے نوحے، سلام و مرثیے کے ذریعے امام اعلی مقام حضرت امام حسینؑ اور شہیدائے کربلاؑ کی بارگاہ میں نظرانہ عقیدت پیش کئے، جبکہ شرکائے یوم حسینؑ کیلئے مختلف طلباء تنظیموں کی جانب سے سبیل امام حسین ؑ کا اہتمام بھی کیا گیا تھا۔
خبر کا کوڈ : 494579
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب