0
Tuesday 3 May 2016 14:59

چوہوں سے ڈرنے والے شیروں پہ ہاتھ ڈال رہے ہیں، مولانا فضل الرحمان

چوہوں سے ڈرنے والے شیروں پہ ہاتھ ڈال رہے ہیں، مولانا فضل الرحمان
اسلام ٹائمز۔ جمعیت علما اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ آف شور کمپنیاں تو عمران خان کی بھی ہیں، لہذا اگر احتساب کرنا ہے تو سب کا ہوگا۔ اگر نواز شریف مستعفی ہوئے تو عمران خان کو بھی پورے ملک میں کہیں بھی جگہ نہیں ملے گی۔ بنوں میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم سے استعفیٰ مانگنے والے خود چوہوں سے ڈرتے ہیں اور وہ پنجاب کے شیروں پر ہاتھ ڈالنے کی کوشش کررہے ہیں۔ آف شور کمپنیاں تو عمران خان کی بھی ہیں، اگر احتساب ہوا تو پھر سب کا ہوگا اور اگر وزیر اعظم نے استعفٰی دیا، تو وہ اپنے گھر یا جیل جائیں گے، لیکن عمران خان کو پورے ملک میں کہیں بھی جگہ نہیں ملے گی، انہیں اپنے سسرال یا تل ابیب میں پناہ ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں مینڈیٹ کا دعویٰ کرنے والے ہی صوبے کی ترقی کی راہ میں رکاوٹ ہیں اور صوبے کو تاریکیوں کی جانب دھکیل رہے ہیں۔ ایسے لوگ ترقی کے نام سے نابلد ہیں لیکن مسند اقتدار پر ہونے کے باعث ان کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ صوبے کو ترقی کی راہ پر گامزن کریں۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ جب انتخابات ہوئے تو ایک ذمہ دار وفد نے مجھے کہا کہ پختونوں میں تہذیب کی جڑیں بہت گہری ہیں اوران کو اکھاڑنے کے لئےعمران خان سے بہتر شخص کوئی اور نہیں مل سکتا۔  عمران خان کے جلسوں میں اخلاقی اقدار کو پامال کیا جاتا ہے اور پختونوں کی عزت کے ساتھ کھیلا جارہا ہے، جب کہ خیبر پختونخوا کی ذمہ داری جن کے سپرد کی تھی انہوں نے صوبے کو دوبارہ جہالت کی تاریکیوں کی طرف دھکیل دیا اور غریبوں کے پیسے کو برباد کردیا ہے۔ سربراہ جے یو آئی (ف) نے کہا کہ صوبائی حکومت کی جانب سے کہا جارہا ہے کہ اقتصادی راہداری کے حوالے سے ہمیں اعتماد میں نہیں لیا گیا، میں ان سے کہتا ہوں کہ نشے میں دھت اور سوئے ہوئے لوگوں کو اعتماد میں نہیں لیا جاتا۔ ہمیں وزیراعظم پر مکمل اعتماد ہے، ان کے پسماندہ علاقے میں آنے سے ترقی کا آغاز ہوگیا ہے اور وزیراعظم کی قیادت میں ترقی کا یہ سفر جاری رہے گا۔
خبر کا کوڈ : 536582
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب