0
Saturday 24 Sep 2016 21:10

پاک روس فوجی دستوں کے درمیان دوستی 2016ء کے نام سے ہونیوالی فوجی مشقیں جاری

پاک روس فوجی دستوں کے درمیان دوستی 2016ء کے نام سے ہونیوالی فوجی مشقیں جاری
اسلام ٹائمز۔ پاکستان کو تنہا کرنے کی بھارتی خواہش پر پانی پھر گیا، پاکستان اور روس کے فوجی دستوں کے درمیان آج سے فوجی مشقوں کا آغاز ہوگیا، مشقوں میں روس کے ستر اور پاکستان کے ایک سو تیس فوجی حصہ لے رہے ہیں، دوستی 2016ء کے نام سے ہونے والی مشقیں 10 اکتوبر تک جاری رہیں گی۔ پاکستان اور روس کے درمیان سفارتی اور معاشی تعلقات میں گرم جوشی کے بعد اب فوجی تعلقات میں بھی یہ ایک اہم اور مثبت موڑ ہے۔ پاکستان کے پہاڑی علاقوں میں روسی فوجی پاکستانی فوجیوں کے ساتھ ملکر مشقیں کر رہے ہیں اور مشکل علاقوں میں جنگ کرنے کے پاکستانی فوج کے تجربات سے فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ روس رواں سال 7 بین الاقوامی فوجی مشقوں کا حصہ ہوگا، جس میں سے پاکستان کے پہاڑی علاقوں میں ہونے والی جنگی مشق اس لحاظ سے تاریخی حیثیت رکھتی ہے کہ یہ دونوں ملکوں کی افواج کے درمیان ہونے والی پہلی مشترکہ جنگی مشق ہوگی۔

روس شنگھائی تعاون تنظیم میں شامل ملکوں اور بھارت کے ساتھ بھی جنگی مشقوں میں حصہ لے گا، روس نے پاکستان کی شنگھائی تعاون تنظیم میں مستقل رکن کی حیثیت سے شمولیت کی بھی بھرپور حمایت کی تھی۔  2014ء میں روس نے پاکستان پر اسلحہ فروخت کرنے پر عائد پابندیوں کو ختم کرکے اسی سال نومبر میں دونوں ملکوں کے درمیان فوجی تعلقات کو مضبوط بنانے کے معاہدے پر بھی دستخط کئے، سال 2015ء میں پاکستان اور روس نے ایک اہم دفاعی معاہدہ بھی کیا، جس کے تحت روس نے پاکستان کو 4 ایم آئی 35 ہیلی کاپٹرز فروخت کئے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق 24 ستمبر سے شروع ہونے والی فوجی مشقیں 10 اکتوبر کو اختتام پزیر ہوں گی۔
خبر کا کوڈ : 569994
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب