0
Friday 30 Jun 2017 16:41

ملک کی معاشی ترقی کے لئے دھرنوں سے گریز کرنے کی ضرورت ہے، گورنر سندھ

ملک کی معاشی ترقی کے لئے دھرنوں سے گریز کرنے کی ضرورت ہے، گورنر سندھ
اسلام ٹائمز۔ گورنر سندھ محمد زبیر کا کہنا ہے کہ 10 جولائی کو جے آئی ٹی صرف اپنی رپورٹ پیش کرے گی لہذا انویسٹر گھبرائیں نہیں 10 جولائی کو کچھ نہیں ہوگا۔ کراچی میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے گورنر سندھ محمد زبیر کا کہنا تھا کہ کراچی میں قانون کی حکمرانی کی صورتحال بالکل تبدیل ہو چکی ہے، کسے معلوم تھا کہ چار سال پہلے والا کراچی اب بہتر صورتحال کا حامل ہوگا، جب کہ پاکستان میں پچھلے 4 سال میں امن و امان کی صورتحال جتنی بہتر ہوئی ہے وہ قابل رشک ہے۔ محمد زبیر نے کہا کہ ایس ای سی پی کا پاکستان اسٹاک مارکیٹ کی ترقی میں اہم کردار ادا کر رہا ہے، موجودہ حکومت کے دور میں اس وقت مارکیٹ کے نیچے جانے کے کئی عوامل ہیں، مارکیٹ کے نیچے جانے کی ایک وجہ جے آئی ٹی بتائی جاتی ہے جس کی وجہ سے سرمایہ کار محتاط ہیں تاہم میرے خیال میں جے آئی ٹی کی وجہ سے گبھراہٹ کی کوئی وجہ نہیں۔

محمد زبیر نے کہا کہ 126 دن کے دھرنے کو یاد رکھنا چاہیئے جس سے حکومت نہیں گری، یہ جمہوری دور ہے جس میں اب آمریت کا کوئی خوف نہیں ہے، جب کہ 2018ء میں الیکشن ہے اور جلد الیکشن کی بھی کوئی امید نہیں، پارلیمنٹ اور حکومت ایک اور سال چلے گی۔ انہوں نے کہا کہ تمام سیاسی پارٹیوں کو ملک کی معاشی ترقی کے لئے دھرنوں سے گریز کرنے کی ضرورت ہے، جب کہ 10 جولائی کو کچھ ہونے نہیں جا رہا، جے آئی ٹی صرف اپنی رپورٹ پیش کرے گی لہذا انویسٹر گھبرائیں نہیں 10 جولائی کو کچھ نہیں ہوگا۔ گورنر سندھ نے کہا کہ کراچی کی عوام کی ضرورت کے مطابق کام نہیں کیا گیا، تھوڑی سی بارش شہر کا حال برا کر دیتی ہے، کئی منصوبے وفاق کی ذمہ داری نہ ہونے کے باوجود ہم نے پورے کئے تاہم برسات کے باعث شہر کی جو حالت ہوئی اس میں وفاق اپنا کردار ادا کرے گا۔
خبر کا کوڈ : 649611
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے