0
Saturday 30 Mar 2019 23:41

سندھ حکومت اور وفاق کے درمیان اختلافات کی خلیج مزید بڑھ گئی

سندھ حکومت اور وفاق کے درمیان اختلافات کی خلیج مزید بڑھ گئی
اسلام ٹائمز۔ وفاق اور سندھ حکومت کے درمیان اختلافات کی خلیج مزید بڑھ گئی، اختلافات کے باعث وزیراعظم کے دورہ کراچی کے دوران دونوں کپتانوں کی ملاقات بھی نہ ہوسکی۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان اور سندھ حکومت کے درمیان دوریاں مزید بڑھ گئی ہیں، وزیراعظم عمران خان کراچی کے دو روزہ دورے پر آئے، لیکن وزیراعلیٰ سید مراد علی شاہ سے ان کی ملاقات نہ ہو سکی۔ وزیراعظم عمران خان نے گورنر ہاؤس میں کراچی ٹرانسفارمیشن کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کی، اجلاس میں گورنر سندھ کے علاوہ وفاقی وزرا اور متعلقہ حکام نے شرکت کی، تاہم وزیراعلیٰ سندھ  کو کے ٹی سی کے اجلاس میں مدعو نہیں کیا گیا۔ ذرائع کے مطابق اگر وزیراعلیٰ سندھ کو کے ٹی سی کے اجلاس میں شرکت کیلئے مدعو کیا بھی جاتا، تو وہ شریک نہ ہوتے، کیونکہ حکومت سندھ کے ٹی سی کو تسلیم نہیں کرتی اور وہ اس کمیٹی کو غیر آئینی تصور کرتے ہیں۔

سندھ حکومت کو وفاق کے سردمہری کے روئیے پر اعتراض ہے، وزیراعلیٰ سندھ نے وزیراعظم عمران خان کو نیب کی مبینہ زیادتیوں، پانی و گیس کے مسائل سے متلعق خطوط لکھے تھے، تاہم جواب نہ ملنے پر مراد علی شاہ نے اپنے بہت سے بیانات میں وفاق کی جانب سے خطوط کے جوابات نہ ملنے پر ناراضی کا اظہار کیا۔ اس ضمن میں سندھ حکومت کے ترجمان بیرسٹر مرتضیٰ وہاب کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے سندھ کے رواں مالی سال میں 120 ارب روپے کی کٹوتی کی گئی ہے، جو زیادتی کے مترادف ہے، ہمیں این ایف سی سمیت کئی معاملات پر وفاق سے تحفظات ہیں، جبکہ وزیراعلیٰ سندھ کو وزیراعظم کے کسی پروگرام میں مدعو نہیں کیا گیا۔
خبر کا کوڈ : 786092
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے