0
Sunday 28 Jul 2019 16:38

پاکستان علماء کونسل کا شرانگیز کتابوں اور لٹریچر پر پابندی کا مطالبہ

پاکستان علماء کونسل کا شرانگیز کتابوں اور لٹریچر پر پابندی کا مطالبہ
اسلام ٹائمز۔ پاکستان علماء کونسل کے چیئرمین حافظ طاہر اشرفی نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے مدارس اور جامعات کو وزارتِ تعلیم سے منسلک کیا، جو احسن اقدام ہے، جسے سراہتے ہیں، چودہ اگست کو مساجد کی چھتوں پر بھی قومی پرچم لہرایا جائیگا۔ لاہور کے الحمرا ہال میں استحکام پاکستان کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حافظ طاہر اشرفی نے کہا کہ پاکستان کا آئین تمام اقلیتوں کے حقوق کا محافظ ہے، 14 اگست کو تمام مساجد اور مدارس پر قومی پرچم لہرائے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ شرانگیز اور نفرت انگیز کتابوں اور لٹریچر پر پابندی لگانی چاہیئے، سعودی حکومت نے روڈ ٹو مکہ پروگرام شروع کیا جس پر اس کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ چیئرمین علماء کونسل نے کہا کہ امریکا کی طرف سے مذہبی آزادی کے نام پر پاکستان کو واچ لسٹ میں رکھنا مسترد کرتے ہیں، مسئلہ کشمیر کو عمران خان نے عالمی سطح پر اٹھایا ہے۔ حافظ طاہر اشرفی نے کہا کہ موجودہ حکومت اور آرمی چیف نے دینی مدارس کو وزارت تعلیم سے منسلک کیا، صرف مدارس ہی نہیں پورے ملک میں ایک نصاب ہونا چاہیے۔ حافظ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ علما کرام سے ملاقات میں آرمی چیف نے کہا ان کی خواہش ہے کہ کبھی ملک کا آرمی چیف دینی مدرسے کا فارغ التحصیل ہو، پاک فوج نہ ہوتی تو آج ہمارا حال بھی لیبیا،  عراق جیسا ہوتا۔
خبر کا کوڈ : 807590
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش