0
Tuesday 17 Sep 2019 21:15
کشمیریوں کو طاقتور بنانا ہی مسئلہ کشمیر کا حل ہے

کشمیریوں پہ فیصلے مسلط کرنے کی روش ترک کرنا ہوگی، علامہ ناصر عباس جعفری

امریکہ اور برطانیہ جب بھی ثالث بنے تو انہوں نے ظالموں کا ساتھ دیا
کشمیریوں پہ فیصلے مسلط کرنے کی روش ترک کرنا ہوگی، علامہ ناصر عباس جعفری
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر پر برطانیہ اور امریکہ پر انحصار ہماری عاقبت نااندیشی کی دلیل ہے، ہمیں دنیا کی غاصب، بددیانت اور ظالم قوتوں سے مسئلہ کشمیر حل کرنے کی اپیل کرنے کی بجائے اقوام عالم میں ہر باضمیر کے دروازے پر اس مسئلے کو لے جانا ہوگا، کشمیریوں کے گھروں پر غاصب افواج قابض ہے، مزاحمت کرنا ان کا قانونی اور انسانی حق ہے۔ ان خیالات کا اظہار علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے تحریک انصاف کی جانب سے منعقدہ آل پارٹیز کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ اب بھی وقت ہے کہ ہم کشمیریوں کی تحریک آزادی کو مضبوط بنائیں اور ان کو اس قابل کریں کہ وہ خود غاصب اور ظالم انڈین افواج، اسٹبلشمنٹ اور آر ایس ایس کا مقابلہ کرسکیں، وہ اپنے فیصلے خود کرسکیں، ہمیں ان پر قیادتیں اور فیصلے مسلط کرنے کی روش ترک کرنا ہوگی۔ ہمیں دیکھنا ہوگا کہ کیا امریکہ اور برطانیہ کے مفاد میں ہے کہ وہ مسئلہ کشمیر کو حل کریں، جبکہ دنیا نے دیکھا ہے کہ جب بھی کسی مسئلے میں امریکہ اور برطانیہ ثالث بنے، انہوں نے ظالموں کا ساتھ دیا ہے۔ ہمیں عالمی رائے عامہ کو کشمیر کے حق میں کرنے کی کوشش کرنا ہوگی، کشمیر کے مظلوم عوام کو عزت احترام کیساتھ طاقتور بنانا ہی اس مسئلے کا واحد راہ حل ہے۔
خبر کا کوڈ : 816744
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے