0
Wednesday 18 Sep 2019 06:11
ایران پر الزام عائد کرنے سے زمینی حقائق بدلنے والے نہیں

تمام فریقین کیلئے بحران سے نکلنے کا واحد حل یمن پر مسلط کردہ سعودی جنگ کا خاتمہ ہے، جواد ظریف

تمام فریقین کیلئے بحران سے نکلنے کا واحد حل یمن پر مسلط کردہ سعودی جنگ کا خاتمہ ہے، جواد ظریف
اسلام ٹائمز۔ اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے ایک پیغام میں لکھا ہے کہ اگر امریکہ پچھلے 4 سالوں کے دوران سعودی عرب کیطرف سے یمن میں ہونیوالے بدترین جنگی جرائم پر سوال نہیں اٹھاتا تو وہ انسانی حقوق کے انکار کا مرتکب ہو رہا ہے۔ انہوں نے لکھا کہ امریکہ شاید اس بات پر تشویش کا شکار ہے کہ سعودی عرب کو بیچے گئے اس کے سینکڑوں ملین ڈالرز کے اسلحے کے باوجود سعودی عرب یمن کی جوابی کارروائیوں کو روکنے میں بری طرح ناکام کیوں رہا ہے۔

ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے لکھا کہ ایران پر الزام عائد کرنے سے زمینی حقائق بدلنے والے نہیں جبکہ تمام فریقوں کے بحران سے نکلنے کا واحد حل یمن پر سعودی عرب کیطرف سے مسلط کردہ جنگ کا خاتمہ ہے۔ انہوں نے اپنے ایک اور پیغام میں لکھا کہ امریکی-سعودی فوجی اتحاد کیطرف سے گذشتہ 4 سالوں کے دوران پیشرفتہ ترین اسلحے کے ذریعے یمنی بچوں کے قتل عام پر امریکہ کو کوئی افسوس نہیں، لیکن جب وہی مظلوم یمنی اپنی جوابی کارروائی میں جارح سعودی عرب کی تیل کی تنصیبات کو نشانہ بناتے ہیں تو (انسانی حقوق کے عالمی ٹھیکیدار) امریکہ کو برا لگ جاتا ہے۔
خبر کا کوڈ : 816784
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب