0
Thursday 10 Oct 2019 23:44

اینٹی کرپشن سندھ کی کمیٹی ون کا اجلاس، مختلف محکموں میں کرپٹ عناصر کی گرفتاریوں کے فیصلے

اینٹی کرپشن سندھ کی کمیٹی ون کا اجلاس، مختلف محکموں میں کرپٹ عناصر کی گرفتاریوں کے فیصلے
اسلام ٹائمز۔ اینٹی کرپشن سندھ کی کمیٹی ون کے اجلاس میں کرپٹ عناصر کے خلاف بڑے فیصلے کئے گئے ہیں، سندھ کے مختلف سرکاری محکموں میں کرپٹ عناصر کو گرفتار کیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق سندھ کے اسکول ایجوکیشن، یونی ورسٹی اور بورڈز سمیت کئی محکموں میں بد عنوانیوں کا انکشاف ہوا ہے، اینٹی کرپشن کمیٹی نے گرفتاریوں کا فیصلہ کرتے ہوئے گھپلوں میں ملوث پروجیکٹ ڈائریکٹر کامران آصف سمیت ٹھیکیدار کی گرفتاری کا حکم دے دیا ہے۔ کمیٹی نے گھوسٹ اساتذہ کے کیس میں 17 مقدمات درج اور 76 افراد کی گرفتاری کا حکم بھی دیا، ذرایع کا کہنا ہے کہ محکمہ یونیورسٹی بورڈ میں ملوث 22 افراد کو گرفتار کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔

محکمہ خوارک میں بدعنوانیوں میں ملوث 10 افسران کے خلاف بھی کارروائی کا فیصلہ ہوا ہے، اسپورٹس کمپلیکس سے متعلق طاہر درانی سمیت 9 افسران کی گرفتاری کی منظوری دی گئی ہے۔ سندھ بلوچ سوسائٹی میں گھپلوں میں بھی 9 عہدیداروں کو گرفتار کرنے کی منظوری دی گئی۔ ادھر اینٹی کرپشن ایسٹ نے صحت کی سہولت کے نام پر بھتہ وصولی کی متعدد شکایات پر کارروائی کرتے ہوئے سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن ایف ٹی سی پر چھاپا مارا، ڈپٹی ڈائریکٹر ضمیر عباسی نے کہا کہ شکایات سندھ کے تمام دفاتر کے خلاف موصول ہوئیں، انسپکشن اور سرٹیفکیٹ کے نام پر بھتہ وصولی کیا جاتا تھا۔ انہوں نے کہا ہیلتھ کیئر کمیشن کے بجٹ میں خورد برد کے شواہد ملے ہیں، افسران بدعنوانی میں ملوث ہیں، چھاپے میں تمام متعلقہ ریکارڈ ضبط کر کے سیل کر دیا گیا، متعلقہ افسران کو بیانات کے لئے طلبی کے نوٹس جاری کئے گئے۔ اینٹی کرپشن نے سی ای او منہاج قدوائی سمیت 5 افراد کو نوٹس جاری کئے، جس پر منہاج قدوائی کا کہنا تھا کہ اینٹی کرپشن سے آفیشل ڈیل کی جائے گی۔
 
خبر کا کوڈ : 821339
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے