0
Friday 11 Oct 2019 15:45

پشاور میں افغان قونصل خانہ بند کر دیا گیا

پشاور میں افغان قونصل خانہ بند کر دیا گیا
اسلام ٹائمز۔ پشاور میں افغان قونصل خانہ بند کر دیا گیا ہے۔ افغان قونصل جنرل محمد ہاشم نیازی نے کہا ہے کہ افغان ملکیتی مارکیٹ سے جھنڈا اتارا گیا، دوکانداروں کو مارا گیا، اس لئے ہم نے قونصل خانہ بند کر دیا ہے، ہم نے پچھلی بار بھی جھنڈا اتارے جانے پر کہا تھا اگر یہ جھنڈا دوبارہ اُتارا گیا تو قونصل خانہ بند کر دیں گے۔ افغان قونصل جنرل کا کہنا تھا کہ ہم اس اقدام کی شدید مذمت کرتے ہیں، حالات حساس ہیں، ایسے وقت میں ایسا نہیں کرنا چاہیئے تھا، قبضہ مافیا کو روکا جائے، پاکستان کو فیصلہ واپس لینا چاہیئے اور اس کا سفارتی سطح پر حل تلاش کرنا چاہیئے۔ خیال رہے کہ پشاور کی افغان مارکیٹ پر ایک پاکستانی شہری سید زوار حسین نے عرصہ دراز سے ملکیت کا دعویٰ کر رکھا تھا اور اب سپریم کورٹ نے بھی اس کے حق میں فیصلہ دے دیا ہے۔

دوسری جانب پاکستان میں افغانستان کے سفارت خانے کا دعویٰ ہے کہ یہ مارکیٹ افغان حکومت نے خریدی تھی اور یہ اس کی ملکیت ہے۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد منگل کو خیبر پختونخوا حکومت اور پاکستانی حکام نے افغان مارکیٹ مقدمہ جیتنے والے شہری کے حوالے کرنے کی کارروائی شروع کی تو مقامی دکانداروں اور افغانستان کے سفارت خانے نے اس پر احتجاج کیا۔ اس کے بعد پاکستان میں افغانستان کے سفیر شکراللہ عاطف مشعال نے پشاور میں افغان مارکیٹ کا دورہ کیا اور مارکیٹ پر دوبارہ افغان جھنڈا لہرا دیا۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے افغان سفیر نے دعویٰ کیا کہ ’افغان مارکیٹ افغان نیشنل بینک کی ملکیت ہے۔‘ انہوں نے دھمکی دی تھی کہ اگر جھنڈا دوبارہ اتارا گیا تو قونصل خانہ بند کر دیں گے۔
خبر کا کوڈ : 821452
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب