0
Saturday 9 Nov 2019 16:32

بی جے پی نے کشمیر کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کردیا ہے، این سی

بی جے پی نے کشمیر کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کردیا ہے، این سی
اسلام ٹائمز۔ بھارتی حکومت پر ریاست جموں و کشمیر کی سیاسی، سماجی، کاروباری، تاجر اور وکلاء انجمنوں کے لیڈران اور عہدیداران کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس نے کہا کہ اس طرح کی گرفتاریوں کا کوئی قانونی جواز نہیں ہے۔ این سی کے ترجمان نے کہا کہ جموں و کشمیر میں اس وقت جمہوریت نام کی کوئی چیز موجود نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت اپنے غیر دانشمندانہ، غیر آئینی اور غیر جمہوری فیصلے کے خلاف کسی کو بھی آواز اٹھانے کا موقع نہیں دے رہی ہے اور اس مقصد کے لئے ریاست جموں و کشمیر کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر بھر میں چھاپہ مار کارروائیوں کا سلسلہ آج تک جاری ہے اور انٹرنیٹ و موبائل سروس بھی مسلسل 92 روز سے معطل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف بھارتی حکومت اس بات کے دعوے کررہی ہے کہ جموں و کشمیر کے عوام نے دفعہ 370 اور 35 اے کی منسوخی کے فیصلے کو خوش اسلوبی کے ساتھ تسلیم کرلیا ہے، اور دوسری جانب یہاں کے عوام سے اظہار رائے کی آزادی کا حق چھینا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر بھارتی حکومت کا یہ دعوٰی صحیح ہے تو کشمیری سیاسی قیادت جیلوں میں کیوں بند ہے اور موبائل و انٹرنیٹ سروس پر مسلسل قدغن کیوں ہے۔
 
خبر کا کوڈ : 826451
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب