0
Sunday 10 Nov 2019 14:14
جامعہ عروۃ الوثقیٰ سے جشن عید میلادالنبی(ص) کی مناسبت سے ریلی

امت کو ’’جسد واحد‘‘ بنانے کی ضرورت ہے، علامہ سید جواد نقوی

امت کو ’’جسد واحد‘‘ بنانے کی ضرورت ہے، علامہ سید جواد نقوی
اسلام ٹائمز۔ لاہور میں حوزہ علمیہ جامعہ عروۃ الوثقیٰ چند رائے روڈ سے میلاد مصطفیٰ کی مناسبت سے خصوصی ’’وحدت ریلی‘‘ نکالی گئی۔ ریلی کی قیادت تحریکِ بیداریِ اُمت مصطفیٰ کے سربراہ علامہ سید جواد نقوی نے کی۔ ریلی میں پیر مقدس کاظمی، پیر علی رضا، مولانا توقیر عباس، مولانا ناصر کربلائی سمیت جامعہ عروۃ الوثقیٰ کے طلباء، اساتذہ اور فرزندان اسلام کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ وحدت ریلی میں سرکار دو عالم حضرت محمد (ص) کی بارگاہ میں درود و سلام اور ہدیہ نعت پیش کرتے رہے۔ ریلی چند رائے روڈ سے فیروز پور روڈ، کوٹ لکھپت پھاٹک سے ہوتی ہوئی واپس جامعہ عروۃ الوثقیٰ پہنچ کر اختتام پذیر ہوئی۔

ریلی سے خطاب کرتے ہوئے علامہ سید جواد نقوی کا کہنا تھا کہ خاتم الانبیاء حضرت محمد (ص) اللہ کی عظیم نعمت اور مرکز وحدت ہیں، مسلمان حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ذات مبارکہ کو مرکزیت قرار دے کر اتحادِ امت کو یقینی بنا سکتے ہیں، وحدت صرف وقت کی ضرورت نہیں بلکہ دین کا تقاضا، اللہ، رسول اور قرآن کا حکم بھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حضور بنی رحمت پوری کائناب کیلئے رحمت بن کر آئے، مگر افسوس امت خرافات کا شکار ہوئی گئی، امت تقسیم در تقسیم ہوتی چلی گئی۔ علامہ جواد نقوی نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ امت کو وحدت کی لڑی میں پرویا جائے، امت کو ’’جسد واحد‘‘ بنایا جائے، تاکہ جسم کے ایک حصے میں تکلیف ہو تو دوسرا حصہ درد محسوس کرے، آج کشمیر میں، فلسطین میں، یمن میں مسلمان شیطانی قوتوں کے استبداد کا شکار ہیں، مگر کوئی ٹس سے مس نہیں ہوتا، کیا حضور بنی کریم نے اپنی امت کو ایسا بنایا تھا۔؟

علامہ سید جواد نقوی نے کہا کہ نہیں حضور(ص) کی امت ایسی نہیں ہوسکتی، وہ تو امت واحدہ تھیں، آج ہمیں بھی امت واحدہ بننا ہوگا، ہمیں بھی متحد ہونا ہوگا، ہمیں بھی ایک دوسرے کے درد کو محسوس کرنا ہوگا، قیامت کے دن ہم اپنے نبی (ص) کو کیا منہ دکھائیں گے کہ امت مظالم کا شکار رہی اور ہم خاموش رہے۔؟ انہوں نے کہا کہ جشن عید میلاد النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے موقع پر اُمت مسلمہ کو اس عہد کی ضرورت ہے کہ تمام تر مسلمان اپنے اپنے مسالک سے بالاتر ہو کر مسلمانیت کے فروغ کو ترجیح دیں۔
خبر کا کوڈ : 826620
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے