0
Saturday 16 Nov 2019 20:43

حکومت نواز شریف کی صحت کی سنگینی کے اعتراف کیساتھ شرط بھی عائد کرتی رہی ہے، مریم اورنگزیب

حکومت نواز شریف کی صحت کی سنگینی کے اعتراف کیساتھ شرط بھی عائد کرتی رہی ہے، مریم اورنگزیب
اسلام ٹائمز۔ پاکستان مسلم لیگ نون کی ترجمان مریم اورنگزیب نے لاہور میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو طویل ہوائی سفر کے لیے طبی طور پر تیار کرنے کے لیے ڈاکٹرز کو 48 گھنٹے درکار ہیں۔ مسلم لیگ نون کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ نواز شریف کو علاج کے لیے بیرون ملک منتقل کرنے کی تیاریاں ہنگامی بنیادوں پر شروع کر دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بیرون ملک فضائی سفر کے دوران نواز شریف کے پلیٹ لیٹس برقرار رکھنے، دل کی کسی ممکنہ تکلیف سے بچاؤ کے لیے ڈاکٹرز طبی احتیاطوں کی تیاری کے عمل میں ہیں، ڈاکٹرز اس امر کو یقینی بنانے کی تگ و دو میں ہیں کہ دوران سفر کسی ممکنہ ایسی طبی پیچیدگی سے بچا جاسکے، جو نواز شریف کی زندگی کے لیے مہلک ثابت ہوسکتی ہو۔

مسلم لیگ نون کی رہنماء نے کہا کہ ڈاکٹرز کی اولین کوشش نواز شریف کے پلیٹ لیٹس کو اس محفوظ سطح پر لانا ہے، جس سے وہ بحفاظت سفر کر سکیں، آج قوم کے لیے ایک بہت بڑے سبق کا دن ہے کہ خیر کی توفیق صرف اللہ تعالیٰ ہی عطا فرمانے والا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کے دل بڑے ہونے چائیئیں، حکومت کی جھوٹی ہمدردیاں قوم کے سامنے بے نقاب ہوگئیں، حکومت خاص طور پر ان 20 دنوں میں نواز شریف کے علاج کی راہ میں مسلسل بلاجواز روڑے اٹکاتی رہی۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ ‎ایک طرف حکومت نواز شریف کی صحت کی سنگینی کا اعتراف کرتی رہی اور دوسری جانب شرط بھی لگاتی رہی، حکومت نے سرکاری میڈیکل بورڈ کی نواز شریف کے بیرون ملک علاج کی سفارش کو نظر انداز کر کے شرط لگائی تھی۔
خبر کا کوڈ : 827770
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے