0
Tuesday 19 Nov 2019 17:23

قبائلی ضلع کرم میں 5 سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل

قبائلی ضلع کرم میں 5 سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل
اسلام ٹائمز۔ ضلع کرم کے سرحدی علاقے پیواڑ غنڈیخیل میں 5 سالہ گل سکینہ کو جنسی زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا۔ والدین نے قاتلوں کی فوری گرفتاری اور پھانسی پر لٹکانے کا مطالبہ کیا ہے۔ پیواڑ غنڈیخیل سے تعلق رکھنے والے 60 سالہ گل علی نے میڈیا کو بتایا کہ ان کی نواسی گل سکینہ گاؤں کے سرکاری سکول میں پہلی جماعت میں پڑھ رہی تھی، گذشتہ روز معمول کے مطابق جب سکول سے گھر واپس نہیں آئی تو ہم نے بچی کی تلاش شروع کر دی، کئی گھنٹے تلاش کے بعد بچی کی لاش پانی کے ایک چھوٹے تالاب سے برآمد ہوئی۔ انہوں نے بتایا کہ بچی کی لاش ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال پاراچنار پہنچائی گئی جہاں پر میڈیکل رپورٹ سے معلوم ہوا کہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ ڈاکٹروں کے مطابق بچی کے جسم پر زخم کے نشان نہیں ہیں۔ بچی کے والد وارث علی فرنٹیئر کور میں لانس نائیک کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے ہیں اور بچی کی والدہ کا انتقال 4 سال پہلے ہوا تھا، والدہ کی انتقال کے بعد دادی بچی کی پرورش کر رہی تھی۔ واقعے کے بعد بچی کی دادی کومہ میں چلی گئی ہے، بچی کے دادا گل علی نے مطالبہ کیا ہے کہ اس واقعے کا مقامی انتظامیہ، پولیس، چیف جسٹس اور پاک فوج فوری طور نوٹس لیں اور واقعے کے حوالے سے تحقیقات کر کے کیس میں ملوث عناصر کو کیفر کردار تک پہنچائے۔ دوسری جانب پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے کے بعد سکول کے دو چوکیدار گرفتار کر لئے گئے ہیں، مزید تحقیقات جاری ہے۔
خبر کا کوڈ : 828056
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب