0
Wednesday 29 Jan 2020 19:08

1967ء سے قبل کی سرحدوں کیمطابق فلسطینی ریاست قائم کی جائے، جسکا دارالحکومت قدس الشریف ہو، پاکستان

1967ء سے قبل کی سرحدوں کیمطابق فلسطینی ریاست قائم کی جائے، جسکا دارالحکومت قدس الشریف ہو، پاکستان
اسلام ٹائمز۔ پاکستان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے امن منصوبے پر ردعمل دیتے ہوئے 1967ء سے قبل کی سرحدوں کے مطابق فلسطینی ریاست کے قیام کا مطالبہ کیا ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ امریکا کی جانب سے مشرق وسطیٰ کے لیے امن منصوبے کے اعلان کو ہم نے دیکھا ہے اور پاکستان نے سلامتی کونسل اور جنرل اسمبلی کی قراردادوں کے مطابق دو ریاستی حل کی ہمیشہ حمایت کی ہے۔ ترجمان نے کہا کہ پاکستان مذاکرات اور بات چیت کے ذریعے فلسطین کے مسئلے کے منصفانہ اور پائیدار حل کی حمایت کرتا ہے، پاکستان مذاکرات اور بات چیت کے ذریعے فلسطینیوں کے جائز حقوق کی فراہمی چاہتا ہے۔ ترجمان نے مطالبہ کیا کہ بین الاقوامی معیار اور 1967ء سے قبل کی سرحدوں کے مطابق فلسطینی ریاست قائم کی جائے، جس کا دارالحکومت قدس الشریف ہو۔

خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کے ساتھ وائٹ ہاؤس میں مشترکہ پریس کانفرنس میں مشرق وسطٰی میں قیام امن کے لیے اپنا منصوبہ پیش کیا۔ امن منصوبے میں مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا غیر منقسم دارالحکومت رکھنے کا عہد شامل ہے، جبکہ فلسطین کو مقبوضہ مشرقی یروشلم کے اندر دارالحکومت بنانے کی اجازت ہوگی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق منصوبے کے نقشے میں مغربی کنارے میں اسرائیل سے منسلک یہودی بستیاں دکھائی گئی ہیں اور مغربی کنارے کو غزہ سے ایک سرنگ کے ذریعے جوڑا گیا ہے۔ منصوبے سے واضح ہوتا ہے کہ بین الاقوامی برادری کی جانب سے غیر قانونی قرار دی جانے والی اسرائیلی بستیاں برقرار رکھی جائیں گی۔ دوسری جانب فلسطین نے امریکی صدر کے امن منصوبے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ مقبوضہ بیت المقدس برائے فروخت نہیں۔
خبر کا کوڈ : 841429
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش