QR CodeQR Code

شہید قاسم سلیمانی جیسے افراد کی پرورش، دینی نظام حکومت کے ثمرات میں سے ایک ہے

فلسطین کا واحد حل اصلی فلسطینی باشندوں کی مرضی کیمطابق نظام حکومت کا قیام ہے، آیت اللہ سید علی خامنہ ای

"صدی کی ڈیل"، ٹرمپ کی موت سے پہلے مَر جائیگی

5 Feb 2020 20:56

آیت اللہ سید علی خامنہ ای نے تاکید کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ فلسطینی مزاحمتی فورسز اپنی پوری قوت کیساتھ قیام کریں گی اور اپنی مزاحمت کو جاری رکھیں گی جبکہ اسلامی جمہوری ایران جو ان مزاحمتی فورسز کی حمایت کو اپنی ذمہ داری سمجھتا ہے، اپنی تمامتر وسعت کیساتھ انکی حمایت جاری رکھے گا جبکہ یہ مدد اسلامی جمہوریہ ایران کے اسلامی حکومتی نظام کی امنگوں میں سے ایک ہے۔


اسلام ٹائمز۔ اسلامی جمہوریہ ایران کے سپریم لیڈر اور آرمڈ فورسز کے کمانڈر انچیف آیت اللہ سید علی خامنہ ای نے تہران میں ہزاروں کی تعداد میں آئی عوام سے خطاب کرتے ہوئے امریکہ و اسرائیل کیطرف سے فلسطینی حقوق کے غصب پر مشتمل اسرائیلی و امریکی سازش "صدی کی ڈیل" کو ایک احمقانہ، خبیثانہ اور شکست خوردہ منصوبہ قرار دیا اور کہا کہ اس منصوبے کے مقابلے کا واحد راستہ فلسطینی قوم کی مزاحمت اور شجاعانہ جہاد اور عالم اسلام کیطرف سے (فلسطینیوں کی) کھلی حمایت ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ صیہونی امریکی سازش "صدی کی ڈیل"، ٹرمپ کی موت سے قبل ہی مَر جائے گی۔

رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ سید علی خامنہ ای نے شہید جنرل قاسم سلیمانی، حضرت زینب سلام اللہ علیہا کے حرم کا دفاع کرنے والے اور اسلامی مزاحمتی محاذ کے دوسرے مجاہدین جیسے افراد کی پرورش، انکے بلند حوصلوں اور شہداء کے خاندانوں کی مزاحمت کو دینی نظام حکومت کا ثمر قرار دیتے ہوئے کہا کہ شہید قاسم سلیمانی کی نمایاں خصوصیات میں انکا راسخ عزم اور محکم ایمان شامل ہے اور خصوصا جب یہ ایمان، عمل صالح اور جہادی حوصلے کیساتھ مل جائے تو سردار سلیمانی جیسی شخصیت پیدا ہوتی ہے کہ جسکے دشمن بھی اسکی تعریف و تمجید کرنے پر مجبور ہو جاتے ہیں۔