0
Wednesday 26 Feb 2020 21:48

دوران پرواز لڑکی کی مسافروں کو قتل کرنے کی دھمکی

دوران پرواز لڑکی کی مسافروں کو قتل کرنے کی دھمکی
اسلام ٹائمز۔ فلسطینی لڑکی نے دوران پرواز سگریٹ نوشی سے روکنے والے ایئر مارشل پر لاتوں کی برسات کر دی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکا میں مقیم فلسطینی لڑکی 27 سالہ ڈانا غازی مصطفیٰ ہفتے کے روز یونائٹڈ ایئرلائن کی پرواز کے ذریعے فرینکفرٹ سے ڈلاس جا رہی تھی۔ دوران پرواز نوجوان لڑکی نے بیت الخلاء میں جاکر سگریٹ نوشی کرنا چاہی تو فضائی میزبان نے اسے منع کیا اور اپنی نشت پر بیٹھنے کا کہا، جس پر ڈانا غازی نے کہا کہ میرے والدین ایک نشئی ڈرائیور کی غلطی کی وجہ سے ہلاک ہوگئے ہیں، اس لیے میں غمزدہ ہوں۔ ڈانا غازی نے کہا کہ مجھے کسی اور سیٹ پر بٹھا دو، تاکہ اپنے غم کو کم کرسکوں۔ غیر ملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق فضائی میزبان نے فلسطینی لڑکی کو دوسری نشت دی تو کچھ دیر بعد پھر باتھ روم میں جاکر سگریٹ نوشی کرنے لگی، ایئر ہوسٹس نے اسے منع کیا تو ڈانا غازی نے ہوسٹس کو دھکا دے دیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق جہاز میں اس وقت دو ایئر مارشلز موجود تھے، جنہوں نے فوری کارروائی کرتے ہوئے فلسطینی لڑکی پکڑنے کی کوشش کی تو غازی نے انہیں بھی تشدد کا نشانہ بنایا، تاہم انہوں نے مذکورہ لڑکی کو پکڑ کر سیٹ پر بٹھا دیا، جس پر فلسطینی لڑکی چیختی ہوئی بولی "سب کو چاقو سے مار دوں گی اور پھر خود کو بھی قتل کر لوں گی، میں فلسطینی ہوں۔" میڈیا ذرائع کا کہنا تھا کہ جہاز کے ورجینیا لینڈ کرتے ہی ایف بی آئی اہلکاروں نے ڈانا مصطفیٰ کو گرفتار کیا تو اس نے اعتراف کیا کہ "والدین کی موت سے متعلق کہانی جھوٹ تھی۔" غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ نارتھ کیرولینا کی رہائشی ڈانا غازی مصطفیٰ پر عدالت میں وفاقی افسران کو تشدد کا نشانہ بنانے کا جرم ثابت ہوگیا تو کم از کم آٹھ سال قید کی سزا ہوسکتی ہے۔
خبر کا کوڈ : 847030
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش