0
Monday 16 Mar 2020 19:42

کورونا وائرس، خوف کی فضا پیدا کرکے عوام کو نفسیاتی عوارض کا شکار کرنا دانشمندانہ عمل نہیں، علامہ ناصر عباس جعفری

کورونا وائرس، خوف کی فضا پیدا کرکے عوام کو نفسیاتی عوارض کا شکار کرنا دانشمندانہ عمل نہیں، علامہ ناصر عباس جعفری
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کورونا وائرس سے بچاؤ کے لئے آگہی مہم میں تیزی لانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ ناگہانی آفات یا کسی بھی سنگین صورتحال سے نمٹنے کے لئے زندہ قومیں بہترین لائحہ عمل طے کرتی ہیں، خوف و ہراس کی فضا پیدا کرکے عوام کو نفسیاتی عوارض کا شکار کرنا دانشمندانہ عمل نہیں۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس صرف پاکستان کا مسئلہ نہیں بلکہ پوری دنیا اس سے متاثر ہے، تاہم وطن عزیز میں جس خوفناک انداز سے کورونا کی تشہیر کی جا رہی ہے یہ نہ صرف پاکستان کے عوام کی تشویش میں غیر معمولی اضافے کا باعث بن رہی ہے بلکہ دیگر ممالک کو بھی پاکستان سے دور کردے گی۔ انہوں نے کہا کہ معاشی استحکام پائیدار عالمی تعلقات سے مشروط ہے، کورونا وائرس پر غیر ضروری آہ و بکا ہمیں دنیا بھر میں تنہا کرسکتی ہے، اس سنگین مسئلے کو سنجیدہ طریقے سے حل کرنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ کورونا کے پھیلاؤ کی رپورٹس کے بعد نہ صرف طبی اشیاء کی مصنوعی قلت پیدا کی جا رہی ہے بلکہ روزمرہ ضرورت کی عام اشیاء کی عدم دستیابی کی شکایات بھی سننے میں آرہی ہیں، حکومت کو چاہیئے کہ وہ کورونا وائرس سے نمٹنے کے ساتھ ساتھ انتظامی معاملات پر بھی اپنی گرفت ڈھیلی نہ ہونے دے، اشیائے خورد ونوش کا خود ساختہ بحران حکومت کی بقاء کو سنگین خطرات لاحق کردے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایران سے تفتان پہنچنے والے زائرین کے حوالے سے حکومتی اقدامات غیراطمینان بخش ہیں، تفتان انتظامیہ کا زائرین کے ساتھ مجرموں جیسا سلوک ناقابل برداشت ہے، قرنطینہ کے باوجود زائرین کو تفتان زبردستی روکا جانا سمجھ سے بالاتر ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کا تعلق کسی مذہب یا مسلک سے نہیں ایسی خبروں پر پابندی ہونی چاہیئے جس کا مقصد عصبیت کا فروغ ہو۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس پوری قوم کا مسئلہ ہے جس کا پوری قوم نے تدبر و بصیرت کے ساتھ مقابلہ کرنا ہے۔
خبر کا کوڈ : 850693
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش