0
Wednesday 25 Mar 2020 15:31

کورونا لاک ڈاون، دو کروڑ سے زائد آبادی والے کراچی میں معمولات زندگی منجمد

کورونا لاک ڈاون، دو کروڑ سے زائد آبادی والے کراچی میں معمولات زندگی منجمد
اسلام ٹائمز۔ صوبہ سندھ میں جیسے جیسے کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے اور اس میں مزید اضافے کے خدشات بھی ظاہر کیے جا رہے ہیں، تو اس کے پیش نظر سندھ حکومت نے بالاخر صوبے بھر میں سخت لاک ڈاؤن کرنے کا فیصلہ کیا، تاکہ اس وائرس کو مزید پھیلنے سے جس حد تک ممکن ہو روکا جا سکے۔ تفصیلات کے مطابق صوبے کے سب سے بڑے شہر کراچی کو لاک ڈاؤن کو ہوئے دو تین روز ہی ہوئے ہیں اور دو کروڑ سے زائد کے آبادی والے شہر میں معمولات زندگی منجمد ہوگئے ہیں۔ ایک حالیہ سروے کے مطابق سماجی دوری اختیار کرنے کی ہدایت کے بعد بہت سے افراد کی زندگی جیسے ٹھہر سی گئی ہے اور بہت سے لوگ اب اپنے اہل خانہ کے ساتھ زیادہ وقت گزار رہے ہیں، کچھ لوگ اپنے مشاغل کو اب صحیح وقت دے پارے ہیں، جبکہ بہت سے لوگوں کو گھر کے روزہ مرہ کے معمولات سے فرار مشکل نظر آرہا ہے۔

سروے میں حصہ لینے والے افراد کی اکثریت یعنی 38.8 فیصد افراد کا کہنا تھا کہ وہ اپنا زیادہ تر وقت انٹرنیٹ اور سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر صرف کرتے ہیں۔ 11.6 فیصد افراد کا کہنا ہے کہ وہ گھر کے کاموں میں مدد کرتے ہیں، تاکہ ان کا بھی وقت گزرے، جبکہ 7.8 فیصد لوگ مطالعے میں وقت گزار رہے ہیں اور اتنے ہی فیصد ٹی وی دیکھ کر اپنے آپ کو بہلا رہے ہیں۔ ان افراد سے جب سماجی دوری کے حوالے سے پوچھا گیا، تو 62 فیصد افراد نے صوبائی حکومت کے اقدام کو سراہا اور اسے ضروری قرار دیا کہ یہ لوگوں کی حفاظت کیلئے ضروری تھا، جبکہ 30 فیصد افراد کا کہنا تھا کہ وہ اس فیصلے سے خوش نہیں ہیں، تاہم وہ اپنے اہل خانہ کے تحفظ کیلئے قانون پر عمل کر رہے ہیں۔
خبر کا کوڈ : 852506
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش