0
Saturday 16 May 2020 21:43

حکومت کی مبہم پالیسی ملت تشیع میں اضطراب کا باعث بنی، علامہ وحید کاظمی

حکومت کی مبہم پالیسی ملت تشیع میں اضطراب کا باعث بنی، علامہ وحید کاظمی
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین خیبر پختونخوا کے سیکرٹری جنرل علامہ وحید عباس کاظمی نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت کی مبہم پالیسی ملت تشیع میں اضطراب کا باعث بنی۔ یوم علی علیہ السلام پر جلوسوں کی برآمدگی کے حوالے سے ملک بھر میں شیعہ قائدین اور حکومتی شخصیات کے مابین مذاکرات جاری تھے اور محدود عزاداروں کے ساتھ عزاداری کے پروگراموں کے انعقاد کا اصولی فیصلہ ہوسکتا تھا، لیکن کے پی کے سمیت مرکزی اور صوبائی حکومتوں نے عجلت کا مظاہرہ کرتے ہوئے یوم علی علیہ السلام کے جلوسوں پر پابندی لگانے کا اچانک اعلان کرکے پوری قوم کو حیرت اور تشویش میں مبتلا کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ ایس او پیز پر عمل درآمد کرتے ہوئے ملک میں بسنے والے ہر مکاتب فکر کو مکمل مذہبی آزادی حاصل ہے۔ تاہم یوم علی علیہ السلام کے موقع ہر ملت تشیع کے ساتھ حکومت کی طرف سے متعصبانہ طرز عمل اختیار کرنے کی کوشش کی گئی، جس پر پوری شیعہ قوم کو اپنے مذہبی جذبات منوانے کے لیے بھرپور انداز کے ساتھ گھروں سے باہر نکلنا پڑا۔

انہوں نے مزید کہا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد بازاروں میں خریداروں کی غیر معمولی تعداد اور ایس او پیز کی دانستہ پامالی متعلقہ اداروں کی بے بسی کو ظاہر کرتی ہے۔ حکومت کو چاہیئے کہ وہ مخصوص مکتبہ فکر کو نشانہ بنانے کی بجائے انتظامی حوالے سے مطلوبہ اہداف پر اپنی گرفت مضبوط کرے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ یوم علی علیہ السلام کے جلوس کے حوالے سے حکومت انتقامی کارروائیوں سے باز رہے اور عزاداران کے خلاف درج مقدمات فوری طور پر کالعدم قرار دیئے جائیں۔
خبر کا کوڈ : 863102
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش