0
Wednesday 9 Sep 2020 14:13

آصف علی زرداری پر فرد جرم عائد، نواز شریف اشتہاری قرار

آصف علی زرداری پر فرد جرم عائد، نواز شریف اشتہاری قرار
اسلام ٹائمز۔ احتساب عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس میں آصف علی زرداری اور یوسف رضا گیلانی پر فرد جرم عائد کردی جبکہ نواز شریف کو اشتہاری قرار دیدیا۔ احتساب عدالت کے جج سید اصغر علی کی سربراہی میں توشہ خانہ ریفرنس کی سماعت ہوئی جس میں سابق صدر آصف علی زرداری اور سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی بطور ملزم عدالت میں پیش ہوئے تاہم سابق وزیراعظم نواز شریف پیش نہیں ہوئے، جس پر جج اصغر علی نے کہا کہ پہلے نواز شریف کا کیس الگ کریں گے پھر دیگر پر فردجرم عائد کریں گے۔ سماعت کے دوران احتساب عدالت کے جج نے کہا کہ آصف علی زرداری اور یوسف رضا گیلانی پر فرد جرم عائد کرتے ہیں، جج اصغر علی نے فاروق ایچ نائیک سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے چارج شیٹ پڑھنی ہے تو پڑھ لیں۔

اس موقع پر وکیل صفائی نے کہا کہ وزیراعظم کے پاس اختیار ہوتا ہے کہ سمری کی منظوری دے، نیب نے اختیارات کے غلط استعمال کا غلط ریفرنس بنایا۔ عدالت کی جانب سے فرد جرم عائد کئے جانے کے بعد سابق صدر آصف علی زرداری اور سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے صحت جرم سے انکار کیا، یوسف رضا گیلانی خود روسٹرم پر آئے اور فرد جرم پر اعتراض اٹھاتے ہوئے کہا کہ میں نے کبھی رولز کے خلاف کوئی کام نہیں کیا، قانون کے مطابق جو سمری آئی اسے منظور کیا، اگر سمری غلط ہوتی تو سمری موو ہی نہ ہوتی۔ احتساب عدالت کے جج اصغر علی نے کہا کہ قانون کے مطابق کارروائی بڑھانی ہے، ہم ابھی کیس کے میرٹس پر بات نہیں کر رہے کہ سمری کیسے آئی اور منظور ہوئی، یہ بات تو آپ ٹرائل کے دوران عدالت کو بتائیں۔

سماعت کے دوران سابق وزیراعظم نواز شریف کو عدالت نے اشتہاری قرار دیا اور ان کے دائمی وارنٹ گرفتاری بھی جاری کر دیئے، عدالت نے کہا کہ 7 روز میں نواز شریف کی منقولہ و غیر منقولہ جائیداد کی تفصیلات پیش کی جائیں جبکہ عدم پیشی پر جائیدادیں منجمند کی جائیں گی۔ توشہ خانہ ریفرنس میں عدالت نے عبدالغنی مجید، انور مجید پر بھی فرد جرم عائد کی تاہم انہوں نے بھی صحت جرم سے انکار کیا جس پر عدالت نے نیب گواہان وقار الحسن شاہ، زبیر صدیقی اور عمران ظفر کو 24 ستمبر کو طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کردی۔
خبر کا کوڈ : 885211
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش