0
Wednesday 28 Oct 2020 00:54

جان بچانے والی 94 ادویات کی اضافہ شدہ قیمتیں جاری

جان بچانے والی 94 ادویات کی اضافہ شدہ قیمتیں جاری
اسلام ٹائمز۔ ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی (ڈریپ) نے کابینہ کی منظوری کے بعد جان بچانے والی 94 ادویات کی اضافہ شدہ نئی قیمتوں کا نوٹی فکیشن جاری کردیا۔ تفصیلات کے مطابق 22 ستمبر کو وفاقی کابینہ نے جان بچانے والی ادویات کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری دی تھی، جس پر آج ڈریپ نے نئی قیمتوں کا نوٹی فکیشن جاری کردیا۔نوٹی فکیشن کے مطابق جن ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا ہے ان میں ہائی بلڈ پریشر، کینسر، امراض قلب کی ادویات و اینٹی ریبیز ویکسین شامل ہیں۔ ایم آر پی کے حصول کے لیے دو شرائط ہوں گی۔ ان ادویات کی اضافہ شدہ قیمت 31 جون 2021ء تک منجمد رہیں گے۔ ڈرگ لیبلنگ و پیکنگ رولز 1986ء کے تحت پیکٹ کے لیبل پر ایم آر پی پرنٹ کرے گا۔

نوٹی فکیشن کے مطابق ریبیز ویکسین کی قیمت 1641 روپے، برنال کریم 30 گرام کی قیمت 35 روپے، ایپی وال 500 ملی گرام کی 100 گولیوں کی قیمت 1075 روہے، بروفین سسپنشن کی قیمت 75 روپے، ایرینیک ٹیبلٹ کی 100 گولیوں کی قیمت 382 روپے، ایرینک فورٹ ٹیبلٹ کی 100 گولیوں کی قیمت 740 روپے، ریواٹرل ٹیبلٹ 2 ملی گرام کی قیمت 282 روپے، نیوروبن ٹیبلٹ کی 100 گولیوں کی قیمت 977 روہے، گلوکو فیچ 750 ملی گرام کی 30 گولیوں کی قیمت 267 روپے، ویرلرکس ویکسین کی قیمت 2904 مقرر کردی ہے۔ دوسری جانب وزارت صحت کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ادویات کی قیمتوں میں اضافہ ان ادویات کی قلت کی بناء پر کیا گیا۔

ذرائع وزارت صحت کے مطابق ڈرگ پالیسی 2018ء میں ان ادویات کی قیمتوں میں اضافے کی سفارش کی گئی تھی کیونکہ ان ادویات کی قیمتوں میں کئی سال سے اضافہ نہیں کیا گیا۔ قیمتوں میں اضافہ نہ ہونے سے ان ادویات کی مارکیٹ میں قلت پیدا ہوئی تھی۔ ادویات کی قلت کے باعث یہ ادویات بلیک میں مہنگے داموں فروخت ہو رہی تھیں۔ بلیک مارکیٹنگ اور قلت کو روکنے کے لیے ان کی قیمتوں میں اضافے کی سفارش کی گئی تھی۔ وزارت صحت کے ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ وفاقی کابینہ نے ان ادویات کی قیمتیں مناسب اضافہ کی اجازت دی تھی جس پر اب ان ادویات کی قیمتوں میں مناسب اضافہ کیا گیا ہے۔
خبر کا کوڈ : 894435
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش