0
Thursday 29 Oct 2020 14:54

سندھ میں گندم کی امدادی قیمت 2 ہزار روپے من مقرر کرنے کا فیصلہ

سندھ میں گندم کی امدادی قیمت 2 ہزار روپے من مقرر کرنے کا فیصلہ
اسلام ٹائمز۔ سندھ میں گندم کی امدادی قیمت 2 ہزار روپے فی من مقرر کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت صوبائی کابینہ کا اجلاس ہوا۔ کابینہ نے گنے کی امدادی قیمت 2 سو 2 روپے فی من مقرر کرنے کی منظوری دے دی۔ ترجمان وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ سندھ میں گندم کی امدادی قیمت 2 ہزار روپے من مقرر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ کابینہ بریفنگ میں کہا گیا کہ 16-2015ء سے 19-2018ء تک سپورٹ پرائس 1300 روپے فی من تھی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ 20-2019ء میں گندم کی قیمت ایک ہزار 400 روپے فی من مقرر کی گئی تھی۔ وزیر خوراک ہری رام نے کابینہ کو بتایا کہ درآمد شدہ گندم ہم 5 ہزار روپے فی 40 کلوگرام پر لیتے ہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ ہم درآمد شدہ گندم پر غیر ملکی زر مبادلہ خرچ کرتے ہیں۔ سیکرٹری خوراک نے کہا کہ درآمد شدہ گندم کا معیار ہماری اپنی گندم کے معیار سے کم ہے اور 8-2007ء میں سپورٹ پرائس 625 فی 40 کلوگرام تھی جبکہ سندھ حکومت نے 9-2008ء میں سپورٹ پرائس بڑھا کے 950 روپے فی من مقرر کی تھی، جس کے نتیجے میں گندم زیادہ اگائی گئی اور سندھ میں بہترین فصل ہوئی۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ مقامی آباد گاروں کو ہم اچھی رقم نہیں دے سکتے۔
خبر کا کوڈ : 894750
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش