0
Tuesday 27 Jul 2021 14:19

احساس محرومی کے باعث کراچی میں لاوا پک رہا ہے، مصطفیٰ کمال

احساس محرومی کے باعث کراچی میں لاوا پک رہا ہے، مصطفیٰ کمال
اسلام ٹائمز۔ پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال کا کہنا ہے کہ کراچی میں لاوا پک رہا ہے، شہری علاقوں میں مایوسی انتہا پر پہنچ چکی ہے۔ تفصیلات کے مطابق غیر قانونی الاٹمنٹ ریفرنس میں پیشی کے بعد پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین نے پیپلز پارٹی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ تیرہ برس سے پیپلز پارٹی کی حکومت اور بدانتظامی انتہا پر ہے، کراچی کو آج پینے کا پانی میسر نہیں، بڑے صنعتی زونز میں پانی کی کمی سے صنعتیں بند ہو رہی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ستر فیصد ریونیو کما کر دینے والے شہر کے ساتھ ایسا ہو رہا ہے، کورونا ایس او پیز کے نام پر ہزاروں نوکریاں ختم ہوگئی ہیں، لگتا ہے مذموم پلاننگ کے تحت سندھ کو تباہ کیا جا رہا ہے، کراچی میں لاوا پک رہا ہے، شہری علاقوں میں مایوسی انتہا پر پہنچ چکی۔ مصفطیٰ کمال نے کہا کہ پی پی والے کہتے ہیں کہ ڈھائی لاکھ لوگوں کو سرکاری نوکری دی گئی، یہ بھی تو بتائیں کہ اس میں جعلی ڈومیسائل والے بھی شامل ہیں، پیپلز پارٹی کو کھلی چھوٹ دے دی گئی ہے، پی ایس پی نے اب مزاحمت کا فیصلہ کیا ہے، مگر ہمارے پاس پیسے دے کر ووٹ خریدنے کی استطاعت نہیں۔

مصطفیٰ کمال نے تحریک انصاف اور پیپلز پارٹی کو جرائم میں پارٹنر قرار دیتے ہوئے کہا کہ کے فور منصوبہ وفاق نے لے لیا، ایک انچ کام نہیں ہوا، جبکہ گرین لائن منصوبے کا انفرااسٹرکچر نواز شریف دور میں مکمل ہوگیا تھا۔ مصطفیٰ کمال نے میڈیا سے گفتگو میں سوال کیا کہ کیا ریسٹورنٹ اور دکانیں بند ہونے سے ہی کورونا پر احتیاط ہو رہی ہے، عالمی وبا کے بہانے کاروبار بند کیا جا رہا ہے، کوشش ہے کہ کاروبار بند کرکے سندھ کو تباہ کیا جائے۔ چیئرمین پی ایس پی نے مزید کہا کہ جو مینڈیٹ پر ناز کرتے پھر رہے ہیں، وہ شہر میں آنہیں سکتے تھے، اس شہر میں 22، 22 افراد کی لاشیں ایک دن میں گرتی تھیں، شہر میں امن ایسے ہی نہیں ہوگیا، اس کیلئے ہم نے اپنا خون دیا ہے۔
خبر کا کوڈ : 945377
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش