0
Sunday 21 Nov 2021 02:01

ایف آئی اے کی بینکوں کو سائبر سکیورٹی سسٹم مضبوط کرنے کیلئے تعاون کی پیشکش

ایف آئی اے کی بینکوں کو سائبر سکیورٹی سسٹم مضبوط کرنے کیلئے تعاون کی پیشکش
اسلام ٹائمز۔ ایف آئی اے نے نجی بینکوں کو سائبر سکیورٹی سسٹم مضبوط کرنے کے لیے تعاون کی پیشکش کر دی، جس کا اسٹیٹ بینک نے خیر مقدم کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹر رضا باقر نے ہفتے کو منی لانڈرنگ ڈیجیٹل فراڈ اور سائبر حملوں کے خلاف باہمی تعاون کے لیے ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے ثناء اللہ عباسی کے ساتھ ایک اجلاس کی صدارت کی۔ اجلاس کا مقصد منی لانڈرنگ، سائبر حملوں اور آن لائن فراڈ کا قلع قمع کرنے کی اسٹیٹ بینک، بینکوں اور ایف آئی اے کی کوششوں کو مضبوط اور مربوط بنانا تھا۔ اجلاس میں بینکوں کے صدور اور ایف آئی اے اور اسٹیٹ بینک کے سینیئر افسران نے بھی شرکت کی۔ گورنر اسٹیٹ بینک نے بینکوں، اسٹیٹ بینک اور ایف آئی اے کے درمیان قریبی تعاون کی ضرورت پر زور دیا، تاکہ وائٹ کالر جرائم کی تیزی سے تفتیش ہوسکے اور فراڈ کرنے والوں کو گرفتار کرکے مقدمات چلائے جاسکیں۔

اجلاس میں ایف آئی اے ٹیم نے بینکوں میں سائبر سکیورٹی کو مضبوط کرنے کے لیے تعاون کی پیشکش کی اور تجویز دی کہ بینک اپنے سسٹمز کا انفارمیشن سکیورٹی آڈٹ کرائیں۔ اس تجویز کا خیر مقدم کرتے ہوئے اسٹیٹ بینک نے بتایا کہ موجودہ ضوابط کے مطابق بینکوں کے لیے لازم ہے کہ وہ باقاعدگی سے اطلاعی نظام کا آڈٹ اور پینی ٹریشن ٹیسٹنگ کرائیں، تاہم پی بی اے کے توسط سے انڈسٹری پر اس حوالے سے پھر زور دیا جائے گا۔ اجلاس میں ان شعبوں میں اسٹیٹ بینک، ایف آئی اے اور بینکوں کے درمیان تعاون کو مضبوط کرنے کے لیے آئندہ کیے جانے والے اہم اقدامات اور ان سے متعلقہ نظام الاوقات کا تعین کیا گیا۔
خبر کا کوڈ : 964636
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش