0
Friday 26 Nov 2021 22:58

نسرین جلیل کا کراچی بھر میں جرائم اور ڈکیتی کی نئی لہر پر اظہار تشویش

نسرین جلیل کا کراچی بھر میں جرائم اور ڈکیتی کی نئی لہر پر اظہار تشویش
اسلام ٹائمز۔ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی ڈپٹی کنوینر نسرین جلیل نے کراچی بھر میں جرائم اور ڈکیتی کی نئی لہر پر اپنی شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کراچی میں ڈکیتی کے دوران خواتین کے ساتھ اجتماعی زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر عوام میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے اور کراچی کے عوام حکومت سندھ کو براہ راست ان واقعات کا ذمہ دار قرار دیتے ہیں۔ نسرین جلیل نے کہا کہ ایسے واقعات کراچی کو دوبارہ انیس سو اسی کی دہائی میں دھکیلنے کی شرمناک سازش قرار دیتے ہوئے کہا کہ جرم کی کوئی زبان یا قومیت نہیں ہوتی لیکن ہم یہ کہنے پر مجبور ہیں کہ حالیہ جرائم کے واقعات میں ملوث لوگوں اور ان واقعات کی روک تھام کے ذمہ داروں میں کئی قدر مشترک ہیں، دونوں کا نہ صرف تعلق شہری کراچی سے نہیں بلکہ ان کے درمیان تعاون اور تعلق بھی نظر آتا ہے۔

نسرین جلیل نے مزید کہا کہ اس طرح کے واقعات تعصب اور نفرت کی بنیاد پر رونما ہورہے ہیں، ایسے واقعات شہر کراچی کو دوبارہ لسانی فسادات کے دور میں لے جائیں گے، متحدہ قومی موومنٹ پاکستان پورے پاکستان بالخصوص سندھ اور شہر کراچی میں عوامی یکجہتی برداشت، تحمل کیلئے بہت زیادہ کوششیں کر چکی اور قربانیاں دے چکی ہے لیکن اس طرح کے واقعات پر ایم کیو ایم پاکستان خاموش تماشائی بن کر نہیں رہ سکتی۔ نسرین جلیل نے اعلیٰ عدلیہ سے مطالبہ کیا کہ حکومت سندھ کی مجرمانہ غفلت کانوٹس لیں اور عوام کی عزت اور آبرو، چادر و چاردیواری کے تحفظ کیلئے ضروری اقدامات اٹھائے جائیں۔
خبر کا کوڈ : 965613
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش